افغانستان سے انخلاء کے بعد امریکہ کو فضائی اڈے نہیں دئے جائیں گے۔ پاکستان کا دو ٹوک اعلان

No Military Bases for US - Pakistan makes it clear
No Military Bases for US – Pakistan makes it clear

 پاکستان نے واضح کیا ہے کہ وہ افغانستان سے فوجی دستوں کے انخلا کے بعد امریکہ کو فضائی اڈے فراہم نہیں کرے گا۔

 پاکستان کا ارادہ نہیں ہے کہ وہ پاکستانی سرزمین پر  امریکی فوج کو بلائے  اور نہ ہی وہ کوئی اڈا  امریکہ کو دے رہا ہے

 پاکستان افغانستان میں امن کے لئے شراکت دار  اور سہولت کار ہوگا

Scroll Down For English Version  

 پاکستان کی جانب سے یہ واضح کیا گیا ہے کہ پاکستان پر امریکہ سے کسی طرح کا دباؤ نہیں ہے کہ وہ فضائی اڈے فراہم کرے اور مکمل طور پر  پاکستان اپنے مفادات کا تحفظ کرے گا۔پاکستان کو  افغانستان میں امن و استحکام کی امید ہے کیوں کہ افغانستان میں امن کا پاکستان کے امن سے براہ راست تعلق ہے-اب قابل غور امر یہ ہے کہ افغانستان کو خود اس بات کو یقینی بنانا ہوگا کہ امن کا یہ عمل پایہ تکمیل تک پہنچے۔    افغانستان میں تشدد میں کمی سے مذاکرات کے لئے سازگار ماحول فراہم کرنے میں مدد ملے گی۔

 امریکہ فوج کے انخلا کے بعد افغانستان پر اپنی نگرانی برقرار رکھنا چاہتا ہے ، اور اسی وجہ سے وہ خطے میں اپنے طیارے،ڈرون اور نگرانی کا باقی سامان رکھنے کے لئے سازگار جگہ کی تلاش میں ہے۔پاکستان کی امریکہ کو کسی قسم کی جگہ فراہم کرنے سے انکار کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ افغانستان میں امریکہ کی جنگ کی وجہ سے پاکستان پہلے ہی بہت نقصان اٹھا چکا ہے اور فوجی اڈے فراہم کرکے اسے مزید برقرار نہیں رکھ سکتا ہے۔ امریکی پینٹاگون نے اعلان کیا ہے کہ وہ خطے میں فوجی اڈوں کی تلاش کر رہا ہے تاکہ دہشت گردی اور امریکہ مخالف سرگرمیوں کے ایک مرکز کے طور پر افغانستان کے دوبارہ ابھرنے کی نگرانی اور اس کی روک تھام کی جاسکے۔

 امریکہ کو اڈے فراہم کرنے کے لئے پاکستان کی جانب سے کوئی ایسی تجویز پیش نہیں کی گئی ہے۔ اس اکاؤنٹ پر قیاس آرائیاں بے بنیاد اور غیر ذمہ دارانہ ہیں اور ان سے پرہیز کیا جانا چاہئےکیوں کہ سوشل میڈیا پر فیک نیوز ایک سنگین مسئلہ ہے اوربغیر تحقیق اور حقائق کے دی گئی خبر بہت جلد پھیلتی ہے۔ پاکستان کی جانب سے یہ دو ٹوک مؤقف سامنے آیا ہے کہ امریکہ کو فوجی اڈے دینے کی خبریں بالکل جھوٹ ہیں اور پاکستان ایسا کوئی ارادہ نہیں رکھتا۔ 

پاکستان اور امریکہ کے معاہدے کی حقیقت

 پاکستان اور امریکی کے درمیان 2001 سے ایئر لائن آف کمیونی کیشن (اے ایل او سی) اور مواصلات کی گراؤنڈ لائنز (جی ایل او سی) کے سلسلے میں تعاون کا فریم ورک موجود ہے۔ لیکن اس سلسلے میں کوئی نیا معاہدہ نہیں کیا گیا ہے۔سوشل میڈیا اور چند صحافیوں کی جانب سے اسی معاہدے کو لے کر یہ قیاس آرائیاں کی گئیں کہ پاکستان امریکہ کو اڈے فراہم کرنے جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان کی خطے میں حالیہ کامیابیاں

 

English Version

  • Pakistan has made it clear that it will not provide air bases to the United States after the withdrawal of troops from Afghanistan.
  • Pakistan does not intend to call in US troops on Pakistani soil, nor does it provide a base for the United States.
  • Pakistan will be a partner and facilitator for peace in Afghanistan

It has been made clear by Pakistan that there is no pressure on Pakistan from the United States to provide air bases and that Pakistan will fully protect its interests.

Pakistan hopes for peace and stability in Afghanistan because Peace in Afghanistan has a direct bearing on Pakistan’s peace – now it is up to Afghanistan to ensure that this peace process is completed. Reducing violence in Afghanistan will help create a conducive environment for dialogue.

The United States wants to maintain its surveillance of Afghanistan after the withdrawal of troops, and that is why it is looking for a suitable place in the region to house its aircraft, drones, and other surveillance equipment.

The main reason for refusing to do so is that Pakistan has already suffered a lot due to the US war in Afghanistan and can no longer sustain it by providing military bases. The Pentagon has announced that it is looking for military bases in the region to monitor and prevent the re-emergence of Afghanistan as a center of terrorism and anti-US activities.

No such proposal has been made by Pakistan to provide bases to the United States. Speculations on this account are baseless and irresponsible and should be avoided because fake news on social media is a serious problem and news without research and facts spreads very quickly.

This blunt position has come out from Pakistan that the news of giving military bases to the United States is completely false and Pakistan has no such intention.

The reality of the Pakistan-US agreement

Pakistan and the United States have had a framework for cooperation since 2001 in the Airline of Communications (ALOC) and Ground Communications (GLOC). But no new agreement has been reached in this regard. There has been speculation on social media and some journalists that Pakistan is going to provide bases to the United States.

 

Facebook Comments

comments

Comments are closed.