طالبان لیڈرشپ کی جانب سے ملا عمر کی قبر پر حاضری

Mullah Omar Grave In Afghanistan - Proved

حال ہی میں افغان میڈیا کی جانب سے دو تصاویر جاری کی گئیں جن میں طالبان لیڈرشپ نے ملاعمر کی قبر پر حاضری دی ہے

طالبان لیڈرشپ کا ملا عمر کی قبر پر جانا پاکستانی مؤقف کی جیت بھی کہا جا سکتا ہے 

یہ تصاویر کس طرح پاکستان کی جیت ہیں؟ آیئے جانتے ہیں

افغان صحافی کی جانب سے یہ تصاویر اس کیپشن کے ساتھ ٹویٹ کی گئیں

طالبان لیڈرشپ کا ملا عمر کی قبر پر جانے کی تصاویر کا سامنے آنا اس بات کو ثابت کر رہا ہے کہ ملا عمر کی قبر افغانستان میں ہی ہے جبکہ مغرب کی جانب سے سالہا سال پاکستان پر یہ الزام لگایا جاتا رہا کہ ملا عمر کی قبر پاکستان میں ہے۔ کہنے کو تو یہ تصاویر محض ایک نیوز اپ ڈیٹ ہیں مگر اسکے اندر جو پیغام چھپا ہے اس نے پاکستان کے مؤقف کو ایک مرتبہ پھر سے فاتح قرار دے دیا ہے

 

بھارتی اور مغربی میڈیا کی جانب سے یہ افواہیں زبان زدِ عام رہیں کہ ملا عمر کی قبر پاکستان میں ہے مگر آج ان تصاویر نے یہ ثابت کردیا ہے کہ ملا عمر کا پاکستان کے ساتھ کوئی تعلق نہیں تھا اور پاکستانی مؤقف ایک بار پھر درست ثابت ہوا ہے 

Taliban leadership at Mullah Omar Grave

پچھلے چند ماہ سے طالبان نے افغانستان کے اہم علاقے فتح کرنا شروع کردیئے تھے اور آخر کار 15 اگست 2021 کے دن افغان طالبان نے کابل میں داخل ہونے کا فیصلہ کیا اور کابل کے انتظامات سنبھال لیے تھے۔ ایک دن قبل امریکہ سے ان کے آخری فوجی کا انخلاء بھی ہو چکا ہے اور مرکز سمیت افغانستان کے پچانوے فیصد سے زائد حصے پر طالبان کی حکومت ہے۔

اس کنٹرول کے بعد طالبان لیڈرشپ نے یہ فیصلہ کیا کہ اپنے قائد اور طالبان کے بانی ملا عمر کی قبر پر حاضری دی جائے گی۔ یہ حاضری افغان میڈیا کے لئے تو محض ایک خبر تھی مگر پاکستان کے خلاف تمام الزامات کو غلط ثابت کر گئی اور یہ ثابت ہوا کہ ملا عمر کی قبر افغانستان میں ہی ہے

آپ اس سٹوری پر کیا کہتے ہیں؟ کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار ضرور کریں

Facebook Comments

comments

Comments are closed.